Welcome to Scribd, the world's digital library. Read, publish, and share books and documents. See more
Download
Standard view
Full view
of .
Look up keyword
Like this
6Activity
0 of .
Results for:
No results containing your search query
P. 1
Meraj Ki Batain

Meraj Ki Batain

Ratings: (0)|Views: 78|Likes:
Published by Uzair Memon
فضائل رجب کے سلسلہ میں جو روایات ہی وہ صحیح ہیں یا نہیں ؟
آخر شب میں بیدار ہوکرنماز پڑھنے اور دعا کرنے کی فضیلت احایث صحیحہ سے ثابت ہے ،حضورﷺ کا معمول تھا ، اور صالحین کا طریقہ اور شیوہ بھی ہے ، شب معراج میں خصوصیت سے بیدار رہنے کے متعلق احادیث صحاح میں کوئی روایت ہمارے علم میں نہیں ہے ۔ ماہ رجب کی مخصوص تاریخوں میں غسل کی جو فضیلت ذکر کی جاتی ہےیہ اصول کے اعتبار سے موضوع ہے ، باطل ہے، ہرگز یہ اعتقاد نہ رکھا جائے ۔ ستائیسویں تاریخ کا روزہ سو برس کے روزہ کے برابر ہونے کی حدیث بھی صحیح نہیں ہے ۔
======================
(183) معراج میں اﷲ کی رویت۔ (فتاویٰ ندوۃ العلماء لکھنؤ)
سوال :معراج میں آپ ﷺ نے کیا اﷲ پاک کو آنکھوں سے دیکھا تھا؟ ِ
ھوالمصوب:
دریافت کردہ صورت میں خود صحابہ میں دو جماعتیں ہیں ،ایک کی رائے یہ ہے کہ معراج کی رات میں رسو ل اﷲ صلی اﷲ علیہ وسلم نے اﷲ تعالی کو دیکھا ہے ،دوسری جماعت کی رائے یہ ہے کہ نہیں دیکھا ہے ،امام نووی شارح مسلم فرماتے ہیں کہ پہلی رائے راجح ہے ،یعنی رسول اﷲ ﷺ نے اﷲ تعالی کو اپنی آنکھوں سے دیکھا ہے : فالحاصل أن الراجح عند أکثر أہل العلم أن رسول اﷲ ﷺ رأی ربہ بعینی راسہ لیلۃ الاسراء(1)
تحریر: محمد ظفر عالم ندوی ؛ تصویب: نا صر علی ندوی
arifaliarifnadwi@yahoo.com
http://www.nadwatululama.org/english/fatwa/arf_fatwa%20nadwa/fatwa%20nadwa.html#
===============================
کیا حضرت محمد صلی اللہ علیہ وسلم نے اللہ کو دیکھا تھا؟
سلف و خلف میں اس بات کا اختلاف رہا ہے کہ شب معراج میں آں حضرت صلی اللہ علیہ وسلم کو رب تعالیٰ کا دیدار ہوا تھا یا نہیں۔ ایک جماعت -جس میں حضرت ابن عباس و حضرت ابوذر رضی اللہ عنم وغیرہ اور بہت سے علماء خلف ہیں- اس بات کی قائل ہے کہ آپ نے اللہ تعالیٰ کو دیکھا تھا۔ پھر ان میں سے بعض کہتے ہیں کہ دل کی آنکھ سے دیکھا تھا اور بعض کہتے ہیں کہ ظاہری آنکھوں سے دیکھا تھا۔ دوسری جماعت -جس میں حضرت عائشہ اور حضرت انس رضی اللہ عنہم اور بہت سے علماء ہیں ۔ اس بات کی قائل ہے کہ آپ صلی اللہ علیہ وسلم نے اللہ تعالیٰ کو نہیں دیکھا تھا اور "مَا کَذِبَ الْفُوٴَادُ مَا رَآی" حضرت جبرئیل کے دیکھنے کا ذکر ہے، چونکہ اس مسئلے میں کوئی واضح دلیل موجود نہیں اور صحابہ کی آراء مختلف ہیں، اس لیے یقین سے کچھ کہنا مشکل ہے۔ علامہ حافظ ابن حجر نے سورہٴ نجم کی تفسیر میں بحث کرتے ہوئے فرمایا کہ قرطبی نے "مفہم" میں اس بات کو ترجیح دی ہے کہ ہم اس معاملہ میں کوئی فیصلہ نہ کریں؛ بل کہ توقف اور سکوت اختیار کریں؛ کیوں کہ یہ مسئلہ کوئی عملی مسئلہ نہیں ہے جس کے کسی ایک رخ پر عمل کرنا ناگزیر ہو؛ بل کہ یہ مسئلہ عقیدے کا ہے جس میں جب تک قطعی الثبوت دلائل نہ ہوں کوئی فیصلہ نہیں ہوسکتا اورجب تک کسی امر میں قطعی بات نہ معلوم ہو حکم ثبوت اور توقف کا ہے، یہی رائے زیادہ احوط اور اسلم ہے۔
http://darulifta-deoband.org/showuserview.do?function=answerView&all=ur&id=5294
-----------------------

باب: اللہ تعالیٰٰ کے فرمان ولقد راٰہ نزلۃً اُخریٰ کے معنی اور کیا نبی ﷺ کو معراج کی رات اپنے رب کا دیدار ہوا؟ کا بیان
صحیح مسلم۔ جلد:۱/پہلا پارہ/ حدیث نمبر:۴۳۲ / حدیث مرفوع
۴۳۲۔ حَدَّثَنَا أَبُو بَكْرِ بْنُ أَبِي شَيْبَةَ حَدَّثَنَا حَفْصٌ عَنْ عَبْدِ الْمَلِكِ عَنْ عَطَاءٍ عَنْ ابْنِ عَبَّاسٍ قَالَ رَآهُ بِقَلْبِهِ۔
۴۳۲۔ ابوبکر بن ابی شیبہ، حفص، عبدالملک، عطاء، ابن عباس رضی اللہ تعالیٰٰ عنہ فرماتے ہیں کہ نبی صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم نے اللہ تعالیٰ کو اپنے دل سے دیکھا۔
صحیح مسلم۔ جلد:۱/پہلا پارہ/ حدیث نمبر:۴۳۳ / حدیث مرفوع
۴۳۳۔ حَدَّثَنَا أَبُو بَکْرِ بْنُ أَبِي شَيْبَةَ وَأَبُو سَعِيدٍ الْأَشَجُّ جَمِيعًا عَنْ وَکِيعٍ قَالَ الْأَشَجُّ حَدَّثَنَا وَکِيعٌ حَدَّثَنَا الْأَعْمَشُ عَنْ زِيَادِ بْنِ الْحُصَيْنِ أَبِي جَهْمَةَ عَنْ أَبِي الْعَالِيَةِ عَنْ ابْنِ عَبَّاسٍ قَالَ مَا کَذَبَ الْفُؤَادُ مَا رَأَی وَلَقَدْ رَآهُ نَزْلَةً أُخْرَی قَالَ رَآهُ بِفُؤَادِهِ مَرَّتَيْنِ۔
۴۳۳۔ ابوبکر بن ابی شیبہ، حفص، عبدالملک، عطاء، ابن عباس رضی اللہ تعالیٰٰ عنہ فرماتے ہیں کہ اللہ تعالیٰ کے فرمان (مَا کَذَبَ الْفُؤَادُ مَا رَأَی وَلَقَدْ رَآهُ نَزْلَةً أُخْرَی) سے مراد یہ ہے کہ اللہ عزوجل کے رسول صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم نے اللہ تعالیٰ کو اپنے دل میں دو مرتبہ دیکھا۔
فضائل رجب کے سلسلہ میں جو روایات ہی وہ صحیح ہیں یا نہیں ؟
آخر شب میں بیدار ہوکرنماز پڑھنے اور دعا کرنے کی فضیلت احایث صحیحہ سے ثابت ہے ،حضورﷺ کا معمول تھا ، اور صالحین کا طریقہ اور شیوہ بھی ہے ، شب معراج میں خصوصیت سے بیدار رہنے کے متعلق احادیث صحاح میں کوئی روایت ہمارے علم میں نہیں ہے ۔ ماہ رجب کی مخصوص تاریخوں میں غسل کی جو فضیلت ذکر کی جاتی ہےیہ اصول کے اعتبار سے موضوع ہے ، باطل ہے، ہرگز یہ اعتقاد نہ رکھا جائے ۔ ستائیسویں تاریخ کا روزہ سو برس کے روزہ کے برابر ہونے کی حدیث بھی صحیح نہیں ہے ۔
======================
(183) معراج میں اﷲ کی رویت۔ (فتاویٰ ندوۃ العلماء لکھنؤ)
سوال :معراج میں آپ ﷺ نے کیا اﷲ پاک کو آنکھوں سے دیکھا تھا؟ ِ
ھوالمصوب:
دریافت کردہ صورت میں خود صحابہ میں دو جماعتیں ہیں ،ایک کی رائے یہ ہے کہ معراج کی رات میں رسو ل اﷲ صلی اﷲ علیہ وسلم نے اﷲ تعالی کو دیکھا ہے ،دوسری جماعت کی رائے یہ ہے کہ نہیں دیکھا ہے ،امام نووی شارح مسلم فرماتے ہیں کہ پہلی رائے راجح ہے ،یعنی رسول اﷲ ﷺ نے اﷲ تعالی کو اپنی آنکھوں سے دیکھا ہے : فالحاصل أن الراجح عند أکثر أہل العلم أن رسول اﷲ ﷺ رأی ربہ بعینی راسہ لیلۃ الاسراء(1)
تحریر: محمد ظفر عالم ندوی ؛ تصویب: نا صر علی ندوی
arifaliarifnadwi@yahoo.com
http://www.nadwatululama.org/english/fatwa/arf_fatwa%20nadwa/fatwa%20nadwa.html#
===============================
کیا حضرت محمد صلی اللہ علیہ وسلم نے اللہ کو دیکھا تھا؟
سلف و خلف میں اس بات کا اختلاف رہا ہے کہ شب معراج میں آں حضرت صلی اللہ علیہ وسلم کو رب تعالیٰ کا دیدار ہوا تھا یا نہیں۔ ایک جماعت -جس میں حضرت ابن عباس و حضرت ابوذر رضی اللہ عنم وغیرہ اور بہت سے علماء خلف ہیں- اس بات کی قائل ہے کہ آپ نے اللہ تعالیٰ کو دیکھا تھا۔ پھر ان میں سے بعض کہتے ہیں کہ دل کی آنکھ سے دیکھا تھا اور بعض کہتے ہیں کہ ظاہری آنکھوں سے دیکھا تھا۔ دوسری جماعت -جس میں حضرت عائشہ اور حضرت انس رضی اللہ عنہم اور بہت سے علماء ہیں ۔ اس بات کی قائل ہے کہ آپ صلی اللہ علیہ وسلم نے اللہ تعالیٰ کو نہیں دیکھا تھا اور "مَا کَذِبَ الْفُوٴَادُ مَا رَآی" حضرت جبرئیل کے دیکھنے کا ذکر ہے، چونکہ اس مسئلے میں کوئی واضح دلیل موجود نہیں اور صحابہ کی آراء مختلف ہیں، اس لیے یقین سے کچھ کہنا مشکل ہے۔ علامہ حافظ ابن حجر نے سورہٴ نجم کی تفسیر میں بحث کرتے ہوئے فرمایا کہ قرطبی نے "مفہم" میں اس بات کو ترجیح دی ہے کہ ہم اس معاملہ میں کوئی فیصلہ نہ کریں؛ بل کہ توقف اور سکوت اختیار کریں؛ کیوں کہ یہ مسئلہ کوئی عملی مسئلہ نہیں ہے جس کے کسی ایک رخ پر عمل کرنا ناگزیر ہو؛ بل کہ یہ مسئلہ عقیدے کا ہے جس میں جب تک قطعی الثبوت دلائل نہ ہوں کوئی فیصلہ نہیں ہوسکتا اورجب تک کسی امر میں قطعی بات نہ معلوم ہو حکم ثبوت اور توقف کا ہے، یہی رائے زیادہ احوط اور اسلم ہے۔
http://darulifta-deoband.org/showuserview.do?function=answerView&all=ur&id=5294
-----------------------

باب: اللہ تعالیٰٰ کے فرمان ولقد راٰہ نزلۃً اُخریٰ کے معنی اور کیا نبی ﷺ کو معراج کی رات اپنے رب کا دیدار ہوا؟ کا بیان
صحیح مسلم۔ جلد:۱/پہلا پارہ/ حدیث نمبر:۴۳۲ / حدیث مرفوع
۴۳۲۔ حَدَّثَنَا أَبُو بَكْرِ بْنُ أَبِي شَيْبَةَ حَدَّثَنَا حَفْصٌ عَنْ عَبْدِ الْمَلِكِ عَنْ عَطَاءٍ عَنْ ابْنِ عَبَّاسٍ قَالَ رَآهُ بِقَلْبِهِ۔
۴۳۲۔ ابوبکر بن ابی شیبہ، حفص، عبدالملک، عطاء، ابن عباس رضی اللہ تعالیٰٰ عنہ فرماتے ہیں کہ نبی صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم نے اللہ تعالیٰ کو اپنے دل سے دیکھا۔
صحیح مسلم۔ جلد:۱/پہلا پارہ/ حدیث نمبر:۴۳۳ / حدیث مرفوع
۴۳۳۔ حَدَّثَنَا أَبُو بَکْرِ بْنُ أَبِي شَيْبَةَ وَأَبُو سَعِيدٍ الْأَشَجُّ جَمِيعًا عَنْ وَکِيعٍ قَالَ الْأَشَجُّ حَدَّثَنَا وَکِيعٌ حَدَّثَنَا الْأَعْمَشُ عَنْ زِيَادِ بْنِ الْحُصَيْنِ أَبِي جَهْمَةَ عَنْ أَبِي الْعَالِيَةِ عَنْ ابْنِ عَبَّاسٍ قَالَ مَا کَذَبَ الْفُؤَادُ مَا رَأَی وَلَقَدْ رَآهُ نَزْلَةً أُخْرَی قَالَ رَآهُ بِفُؤَادِهِ مَرَّتَيْنِ۔
۴۳۳۔ ابوبکر بن ابی شیبہ، حفص، عبدالملک، عطاء، ابن عباس رضی اللہ تعالیٰٰ عنہ فرماتے ہیں کہ اللہ تعالیٰ کے فرمان (مَا کَذَبَ الْفُؤَادُ مَا رَأَی وَلَقَدْ رَآهُ نَزْلَةً أُخْرَی) سے مراد یہ ہے کہ اللہ عزوجل کے رسول صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم نے اللہ تعالیٰ کو اپنے دل میں دو مرتبہ دیکھا۔

More info:

Published by: Uzair Memon on Jun 04, 2013
Copyright:Attribution Non-commercial

Availability:

Read on Scribd mobile: iPhone, iPad and Android.
download as PDF, TXT or read online from Scribd
See more
See less

09/15/2014

pdf

text

original

 
www.pdfbooksfree.blogspot.com
 
www.pdfbooksfree.blogspot.com
 
www.pdfbooksfree.blogspot.com

Activity (6)

You've already reviewed this. Edit your review.
Ahmadi Muslim liked this
1 hundred reads
Uzair Memon liked this
Uzair Memon liked this
Shahzaib Khan liked this
Uzair Memon liked this

You're Reading a Free Preview

Download
scribd
/*********** DO NOT ALTER ANYTHING BELOW THIS LINE ! ************/ var s_code=s.t();if(s_code)document.write(s_code)//-->