You are on page 1of 4

‫﷽‬

‫امت مسلمہ کی رہنمائی اور نجات کیلئے مختصر ترین گزارشات‬


‫‪ )1‬قرآن پاک ‪ ،‬حدیث شریف اور تاریخ کی روشنی میں‪:‬‬
‫تعالی کے دربار میں سرخرو ہونے کے لیے جاننااور نار‬
‫ٰ‬ ‫ایسے حقائق جو امت مسلمہ کے لیے ہللا‬
‫جہنم سے بچنے کے لیے تسلیم کرنا اور عمل کرنا ضروری ہے ۔ ہللا پاک کا ارشاد گرامی ہے‬
‫کہ"جو کچھ بھی رسولﷺ تم کو دے دیں اسے لے لو اور جس چیز سے منع کر دیں اس سے رک‬
‫جاؤ" (سورۃ حشر آیت نمبر‪)07‬‬
‫لیکن منافقین میں " کچھ ایسے بھی ہیں جو یہ کہتے ہیں کہ ہم ہللا اور آخرت پر ایمان لے آئے ہیں‬
‫حاالنکہ وہ صاحب ایمان نہیں ہیں یہ ہللا اور صاحب ایمان کو دھوکا دینا چاہتے ہیں حاالنکہ خود کو‬
‫ہی دھوکا دیتے چلے آ رہے اور اسے سمجھتے بھی نہیں ہیں ان کے دلوں میں بیماری ہے جس کو‬
‫تعالی نے نفاق کی بناء پر اور بڑھا دیا ہے اب اس چھوٹ کی بناء پر اور بڑھا دیا ہے ۔ اب اس‬
‫ٰ‬ ‫ہللا‬
‫جھوٹ کے عوض میں انھیں دردناک عذاب ملے گا۔"(سورۃ توبہ)‬
‫مزید وضاحت قرآن پاک اور حضور پاک ﷺ کے فرمان کا انکار کرنے والوں کے لیے ارشااد ہوا‬
‫کہ"کافر یہ نہ سمجھیں کہ ہم نے ان کو جو مہلت دی ہے تو ان کی باتیں ہم کو پسند آئی ہیں (نہیں)‬
‫بلکہ مہلت اس لیے دی ہیں تاکہ وہ گناہ پر گناہ کرتے جائیں اور ہم عذاب پر عذاب تیز کرتے جائیں‬
‫گے۔"(سورۃ آ َل عمران آیت نمبر ‪)178‬‬
‫‪ )2‬حدیث پاک کی روشنی میں ‪:‬‬

‫اول سے چندحوالہ جات‬


‫بخاری شریف جلد ّ‬
‫جس نے ہمارے دین میں کوئی نئی بات نکالی وہ مردود ہے (روایت حضرت عائشہ �صفحہ‬ ‫‪.1‬‬
‫نمبر ‪)933‬‬
‫حضورﷺ کا نماز میں مختصر سورتیں پڑھنے کا حکم (صفحہ ‪)127‬‬ ‫‪.2‬‬
‫حضرت عمر کا نماز تراویح جماعت کے ساتھ ایجاد کر کے اچھی بدعت کہنا صفحہ ‪)709‬‬ ‫‪.3‬‬
‫حضرت عمر کا حضورﷺ کے حکم کا انکار کرنا اور حضور ﷺ نے ان کو اپنی محفل سے‬ ‫‪.4‬‬
‫نکال دینا (صفحہ ‪)134‬‬
‫جمعہ کے دن دوسری آذان حضرت عثمان �نے شروع کروائی (صفحہ ‪)380‬‬ ‫‪.5‬‬
‫(مطبوعہ باب السالم پریس کراچی)‬ ‫اول کے حوالہ جات‬ ‫ٰ‬
‫مشکوۃ شریف جلد ّ‬
‫بدعتی کا بیان (صفحہ ‪)84‬‬ ‫‪.1‬‬
‫بدعتی کی تعظیم نہ کرو جس نے بدعتی کی تعظیم کی اس نے اسالم کو ڈھا نے میں مدد‬ ‫‪.2‬‬
‫دی(صفحہ ‪)92‬‬
‫قرآن و حدیث کو مضبوطی سے پکڑو لیکن حضرت عمر� نے (حسبنا کتاب ہللا کہہ کر فرمان‬ ‫‪.3‬‬
‫رسول ﷺکا انکار کیا )‬
‫حضورؤ کا صحابہ کو فرمانا کہ میں تمھیں آگ سے نکالتا ہوں لیکن تم مجھ پر غالب آ کر‬ ‫‪.4‬‬
‫آگ میں گر جاتے ہو (صفحہ‪)86‬‬
‫بحوالہ صحیح مسلم شریف‬
‫‪ .1‬حضرت انس بن مالک روایت کرتے ہیں کہ حضور ﷺ نے فرمایا کہ حوض کوثر پر چند‬
‫ایسے اصحاب آئیں گے جو دنیا میں میرے ساتھ رہے ہیں جب میں ان کو دیکھوں گا تو‬
‫میرے سامنے کر دیے جائیں گے تو روکے جائیں گے تو میں کہوں گا کہ پروردگار یہ تو‬
‫میرے صحابی ہیں تو جواب ملے گا تم نہیں جانتے کہ تمہارے بعد انھوں نے کیا کیا بدعتیں‬
‫جاری کی ہیں(جلد ‪ 6‬صفحہ ‪) 27‬‬
‫بحوالہ تاریخ اہل سنت شمس العلماء عالمہ شبلی نعمانی کی کتاب الفاروق سوانح عمری حضرت‬
‫عمر فاروق � سقیفہ بنی ساعدہ حضرت ابوبکر �کی خود ساختہ خالفت اور حضرت عمر کا‬
‫استخالف مالحظہ کر سکتے ہیں۔ ( صفحہ‪ 79‬اور تفصیل تاریخ طبری صفحہ ‪ 13‬اور ‪)14‬‬
‫اسی کتاب کے صفحہ ‪ 71‬پر حضرت عمر نے اپنی حکومتی گرفت مضبوط کرنے کے لیے‬
‫قرآن اور سنت رسولﷺ کے خالف احکامات جاری کیے مثالً‬
‫‪2‬۔امیر المؤمنین کا لقب خود اختیار کیا ‪3‬۔ جیل خانہ قائم‬ ‫‪1‬۔ پولیس کا محکمہ قائم کیا‬
‫کیا ‪4‬۔ فجر کی آذان میں " الصالۃ خیرامن النوم" کا اضافہ کیا (مؤطہ امام مالک یں اس کی‬
‫تفصیل موجود ہے)‬
‫‪5‬۔ عدالتیں قائم کیں قاضی مقرر کیے‬
‫‪6‬۔ تیں طالقوں کو ایک ساتھ دیے جانے کو طالق بائن قرار دیا گیا ۔( جو کہ قرآن اور سنت‬
‫رسول ﷺکے خالف ہے)‬
‫‪7‬۔ بنو صعلب کے عیسائیوں پر بجائے جزیہ کے ٰ‬
‫زکوۃ مقرر کی ۔‬
‫‪8‬۔ نماز جنازہ میں چار تکبیروں پر تمام لوگوں کا اجماع قرار دیا جب کہ حدیث کی کتابوں میں‬
‫پانچ تکبیر نماز جنازہ سنت رسولﷺ ہے۔حضرت ابن عباس اور چند مخلص صحابہ کرام اور اہل‬
‫بیت رسو ل ؑ پانچ تکبیر نماز جنازہ پڑھا کرتے تھے۔‬
‫(جس کے ذریعے پوری شریعت تبدیل کر دی) شریعت محمدی کا ہر‬ ‫‪9‬۔قیاس کا قانون بنایا‬
‫قانون اپنے قیاس یعنی(اپنی مرضی سے تبدیل کر دیا جس پر شیعان محمد ﷺو آل محمد اور چند‬
‫مخلص صحابہ کرام کے عالوہ باقی سب فرقے عمل کرنا سعادت سمجھتے ہیں۔‬
‫حضرت عمر بن خطاب کا نماز ہاتھ باندھ کرپڑھنے کاحکم‬
‫حضرت عمر بن خطاب کا نماز ہاتھ باندھ کر پڑ ھنے کا حکم اپنی خالفت کے آخری دور میں‬
‫ایجاد کیا ۔ جبکہ قرآن مجید میں سورۃ النور کی آیت ‪ 41‬پارہ نمبر ‪ 18‬اس آیت کریمہ سے ثابت‬
‫تعالی کی نماز‬
‫ٰ‬ ‫ہے کہ زمین و آسمان کی مخلوق بمعہ پرندوں کے اپنے پروں کو پھیال کر ہللا‬
‫یعنی ہاتھ کھول کر تسبیح کرتے ہیں ناکہ باندھ کر اور یہ نماز میں ارسال یدین نص صریح ہے۔‬
‫دوسری آیت کریمہ میں ہللا تعالی ٰ کا ارشاد ہے کہ اے رسول ﷺ کہہ دو کہ میرے پروردگار نے‬
‫تو عدالت کا حکم دیا ہے اور یعنی ہر نماز کے وقت قبلہ کی طرف اپنے رخ کرو اور دین کو اسی‬
‫اول میں اس نے تمہیں پیدا کیا تھا‬ ‫کے لیے خالص سمجھ کر اس سے دعا مانگو جیسا کہ ً‬
‫ویسے ہی اس کے حضور پلٹ کر جاؤ گے سورۃ االعراف پارہ ‪، 8‬آیت نمبر ‪ 29‬سے ہاتھ چھوڑ‬
‫کر نماز پڑھنا ثابت ہے اور سنت رسول ﷺ سے ہاتھ چھوڑ کر پڑھنا ثابت ہے اور اہل سنت کے‬
‫امام مالک ؒکے مطابق بھی ہاتھ چھوڑ کر نماز پڑھنا ثابت ہے ۔(بحوالہ کتاب الصائر درجات‬
‫صفحہ ‪)58‬‬

‫قرآنی فیصلہ‬
‫‪ ( .1‬سورۃ فرقان آیات ‪ 27‬تا ‪ )31‬اس روز ظالم اپنے ہاتھوں کو کاٹے گا اور کہے گا کہ کاش‬
‫میں نے رسول ﷺ کے ساتھ راستہ اختیار کیا ہوتا ہائے افسوس !میں نے فالں شخص کو اپنا‬
‫دوست نہ بنایا ہوتا اس نے تو ذکر کے آنے کے بعد بھی مجھے گمراہ کر دیا ۔ شیطان انسان‬
‫کو رسوا کرنے واال ہے ہی اور اس روز رسول ﷺ آواز دیں گے کہ اس امت نے قرآن کو بھی‬
‫نظر انداز کر دیا تھا اور اسی طرح ہم نے ہر نبی کے لیے مجرمین میں سے کچھ دشمن قرار‬
‫تعالی کافی ہے۔‬
‫ٰ‬ ‫دیے ہیں اور ہدایت و امداد کے لیے ہللا‬
‫قل ان کنتم تحبون ہللا فاتبعونی یحببکم ہللا ۔ترجمہ"اے رسول ہللاﷺ کہہ دیجیئے کہ اگر تم ہللا‬
‫سے محبت کرتے ہو تو میری اتباع کرو ہللا بھی تم سے محبت کرے گا"۔‬
‫‪ 66‬میں ارشاد رب العزت ہے کہ "جو لوگ ہمارے نازل‬ ‫مزید وضاحت سورۃ البقرہ آیت‬
‫کئے ہوئے واضح بیانات اور ہدایت کو ہمارے بیان کر دینے کے بعد بھی چھپاتے ہیں ان پر‬
‫ہللا بھی لعنت کرتا ہے اور تمام لعنت کرنے والے بھی لعنت کرتے ہیں عالوہ ان لوگوں کے‬
‫جو توبہ کرلیں اور اپنے کئے کی اصالح کر لیں اور جس چیز کو چھپایا ہے واضح کردیں تو‬
‫ہم ان کی توبہ قبول کر لیتے ہیں کہ ہم بہترین توبہ قبول کرنے والے مہربان ہیں "۔‬
‫‪( .2‬سورۃ توبہ آیت ‪ )101‬اہل مدینہ میں وہ بھی ہیں جو نفاق میں ماہر اور سر کش ہیں تم ان‬
‫کو نہیں جانتے لیکن ہم ان کو خوب جانتے ہیں عنقریب ہم ان پر دوہرا عذاب نازل کریں گے‬
‫اور پھر یہ عظیم عذاب کی طرف پلٹا دیے جائیں گے۔‬

‫جنت کی الم ناک شہادت کے‬


‫رحمت اللعالمین ﷺ کی اکلوتی بیٹی خاتون ؑ‬
‫مجرموں اور چشم دید گواہوں کا تعارف‬
‫مدینہ الرسولﷺ میں اور آپ کے گھر میں آپ کی بیٹی کو آپ کے صحابہ نے بچوں کے سامنے‬
‫شہید کیا اور آپ کی بیٹی کی اوالد کو انہی صحابہ کی اوالد اور باقیات نے کربال میں والدین کے‬
‫موجودگی میں شہید کیا ۔مدینہ الرسول ﷺ میں وہ جانثار صحابہ کرام جوحضورﷺ کے جنازہ اور غم‬
‫میں شریک تھے اس واقع کے چشم دید گواہ ہیں اور جن کی موجودگی میں یہ واقع رونما ہوا ان‬
‫کےنام یہ ہیں ‪:‬‬
‫‪ )4‬حضرت بریدہ‬ ‫‪ )2‬حضرت مقداد� ‪ )3‬حضرت عمار یاسر�‬ ‫‪ )1‬حضرت سلمان فارسی�‬
‫�‬
‫‪ ) 6‬حضرت‬ ‫‪ )5‬حضرت امیر المومنین علی ؑ‬
‫اور دیگر بنی ہاشم اور اس واقع کی حقیقت کی تصدیق امام‬ ‫حسین‬
‫ؑ‬ ‫امام حسن ؑ ‪ )7‬حضرت امام‬
‫باقر ‪ ،‬امام جعفر صادق ؑ نے بھی کی ہے۔جہاں تک مزامت کا تعلق ہے ابوبکر‬ ‫ذین العابدین ؑ ‪،‬امام محمد ؑ‬
‫بن قعافہ کی بیعت کے لیے حضرت علی ؑ سے لینے کیلئے انکار کرنے پرحضرت علی ؑ کوقتل کر دینے‬
‫کے فیصلے کے ساتھ حملہ کیا عمر بن خطاب نے رسول ہللا ﷺ کی رحلت کے تیسرے دن آپ کے‬
‫گھر پر حملہ کر کے دروازے کو آگ لگا دی اور دروازہ گرا دیا اور پھر زبر دستی گھر میں داخل ہو‬
‫گئے حضرت فاطمہ ؑ جب فریاد کرنے لگیں تو عمر بن خطاب نے جناب سیدہ ؑ کو تما چہ مارا اور‬
‫سیدہ کو کوڑا مارا ۔ اور عمر بن خطاب نے نیام سے تلوار‬‫ؑ‬ ‫اس کے چچا ذاد بھائی قنفذ نے جناب‬
‫آپ کے پہلو پر دے ماری جس سے جناب سیدہ فاطمہ ؑ کی پسلیاں ٹوٹ گئیں اور آپ ؑ‬ ‫نکالی اور ؑ‬
‫کے شکم مبارک میں محسن پاک شہید ہوگئےاس وقت آپ ؑ نے ‪،‬ہائے بابا کہہ کر فریاد کرنے لگیں‬
‫علی دوڑ کر آئے اور عمر کی ہنسلیاں پکڑ کر‬‫۔ یہ فریاد سن کر جان نثار صحابہ کرام� اورحضرت ؑ‬
‫زمین پر دے پٹخارہ اور اس کی ناک اور گردن کو زخمی کر دیا اور ارادہ کیا کہ اس کو قتل کردیں‬
‫کہ یکا یک رسول اکرم ﷺ کی وصیت یاد آئی تو صحابہ کرام کو بھی صبر کی تلقین کی کہ محمد و آل‬
‫محمد ؑ ہمیشہ توحید کے دشمنوں پر تلوار اٹھاتے ہیں نہ کہ اپنے دشمنوں پر ‪ ،‬جبکہ تاریخ میں توحید‬
‫کے دشمن مشہور کافر عمر بن عبدو ود کو واصل جہنم کرنا چاہا تو اس نے آپ ؑ کے چہرہ اقدس‬
‫پر تھوک دیا تو آپ ؑ نے اسے چھوڑ دیا اور فرمایا کہ ہم اہل بیت رسول ؑ کبھی اپنی ذات کے لیے‬
‫تلوار نہیں اٹھا تے ہمیشہ تو حید کے دفاع کے لیے اٹھاتے ہیں۔حضور ﷺ کی شہادت کے بعد معاویہ‬
‫نے خود ساختہ خالفت کو تحفظ دینے کیلئے جھوٹی حدیثیں گڑنے کے لیے باقاعدہ اللچی ذرخرید‬
‫قاضیوں کو مقرر کیا ۔(بحوالہ اسرار امامت)‬
‫مکمل تفصیل کے لیے ہماری ویب سائٹ وزٹ کریں ۔‬
‫‪https://www.scribd.com/document/337894247/Haqeeqi-Islam‬‬
‫( ‪NOTE: Please translate this note into your languages for the happiness to Allah and Nabi‬‬
‫)‪S.A.W.W‬‬